تاریخ شائع کریں2022 14 January گھنٹہ 22:43
خبر کا کوڈ : 534428

صدر سید ابراہیم رئیسی کا آئندہ دورہ ماسکو بہت اہم واقعہ ہے

انہوں نے اگر چہ کورونا کی وبا دونوں ممالک کے وفود کی ملاقاتوں اور دوروں میں رکاوٹ بن گئی ہے لیکن اس کے باوجود ولادیمیر پیوٹن اور سید ابراہیم رئیسی نے  نے کئی ٹیلی فون کالز کیں۔
صدر سید ابراہیم رئیسی کا آئندہ دورہ ماسکو بہت اہم واقعہ ہے
 روس کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر سید ابراہیم رئیسی کا آئندہ دورہ ماسکو بہت اہم واقعہ ہے۔

یہ بات سرگئی لاوروف نے جمعہ کے روز ایک نیوز کانفرنس سے صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے بتایا کہ ایران کے صدر کا دورہ ماسکو ایک انتہائی اہم واقعہ ہے۔ تہران اور ماسکو کے درمیان سیاسی تعلقات دوبارہ شروع کیے جائیں۔

انہوں نے اگر چہ کورونا کی وبا دونوں ممالک کے وفود کی ملاقاتوں اور دوروں میں رکاوٹ بن گئی ہے لیکن اس کے باوجود ولادیمیر پیوٹن اور سید ابراہیم رئیسی نے  نے کئی ٹیلی فون کالز کیں۔

روس کے وزیر خارجہ نے کہا کہ ایران اور روس کے صدور کی ملاقات میں ایران اور روس کے تعلقات کے تمام امور پر تبادلہ خیال اور جائزہ لیا جائے گا۔

لاوروف نے مزید کہا کہ گزشتہ سال ایرانی حکومت کی تبدیلی کے باوجود ہمیں یہ دیکھنا چاہیے کہ اس ملک کی پالیسی کس طرح جاری رہتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایران اور روس کے بہت مشترکہ منصوبے ہیں اور دونوں ممالک ان منصوبوں پر کام کر رہے ہیں اور ایران اور روس کے درمیان اقتصادی تعاون کا مشترکہ کمیشن بھی اس سلسلے میں اقدام کر رہا ہے۔

روسی وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ بلاشبہ، ایران اور روس کے رہنماؤں کی ملاقات میں بین الاقوامی مسائل بشمول جوہری معاہدے اور خلیج فارس کی سلامتی کے مسائل پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔
http://www.taghribnews.com/vdcf0jdtcw6dmja.k-iw.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس