تاریخ شائع کریں2022 12 August گھنٹہ 21:37
خبر کا کوڈ : 561196

نیویارک میں پیغمبر اسلام (ص) کی شان میں گستاخی کتاب کا منصف سلمان رشدی پر حملہ

ایسوسی ایٹڈ پریس کے ایک رپورٹر نے اس خبر کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جب  ایک مقرر سلمان رشدی کا تعارف کروا رہا تھا تو ایک شخص نے جائے وقوعہ پر حملہ کیا اور سلمان رشدی کو گھونسے یا چوقو مارے۔
نیویارک میں پیغمبر اسلام (ص) کی شان میں گستاخی کتاب کا منصف سلمان رشدی پر حملہ
پیغمبر اسلام (ص) کی شان میں گستاخی کرنے والی کتاب شیطانی آیات کے مصنف سلمان رشدی پر جمعہ کو مقامی وقت کے مطابق اس وقت حملہ کیا گیا جب وہ مغربی نیویارک میں تقریر کرنے جا رہے تھے۔

ایسوسی ایٹڈ پریس کے ایک رپورٹر نے اس خبر کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جب  ایک مقرر سلمان رشدی کا تعارف کروا رہا تھا تو ایک شخص نے جائے وقوعہ پر حملہ کیا اور سلمان رشدی کو گھونسے یا چوقو مارے۔

آن لائن شائع ہونے والی ایک ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ جائے وقوعہ پر موجود افراد تیزی سے جائے حادثہ کی طرف بڑھ رہے ہیں۔

اس کے بعد سلمان رشدی زمین پر گر پڑے اور وہاں موجود لوگوں نے حملہ آور کو گرفتار کر لیا۔

ایک عینی شاہد نے ایسوسی ایٹڈ پریس کو سلمان رشدی پر حملے کے بارے میں اپنے مشاہدات کے بارے میں بتایا کہ حملہ آور تیزی سے پلیٹ فارم پر آیا اور سلمان رشدی کو مارنا شروع کر دیا۔

اس عینی شاہد کے مطابق Satanic Verses کتاب کے مرتد مصنف کو 20 سیکنڈ تک مارا پیٹا گیا۔

خبر رساں ادارے روئٹرز نے سلمان رشدی کے بارے میں ایک ذریعے کے حوالے سے کہا: ہمیں ہنگامی صورتحال کا سامنا ہے۔

نیویارک پولیس نے اعلان کیا کہ سلمان رشدی کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے ہسپتال لے جایا گیا جس کی گردن پر چھرا گھونپ دیا گیا تھا اور ان کی حالت ابھی تک معلوم نہیں ہے۔

نیویارک پولیس کے بیان کے مطابق 12 اگست 2022 کی صبح 11 بجے ایک مرد مشتبہ شخص پوڈیم کی طرف بھاگا اور سلمان رشدی اور انٹرویو لینے والے پر حملہ کیا۔

 سلمان رشدی نے گستاخانہ کتاب "Evil Verses" شائع کی جس نے پوری دنیا کے مسلمانوں کو ناراض کر دیا۔

سلمان رشدی کے اس ذلت آمیز فعل کے بعد وہ سخت حفاظتی اقدامات کے تحت خفیہ زندگی گزارنے پر مجبور ہوگئے اور چونکہ برطانوی حکومت نے اس توہین آمیز کتاب کی اشاعت کی بنیاد فراہم کی تھی اس لیے اس نے بے تحاشا اخراجات کرکے ان کی جان کی حفاظت کی ذمہ داری لی۔ اسے کئی بار اپنی رہائش کی جگہ بدلنی پڑی۔

 نیویارک کی گورنر کیتھی ہکول کا کہنا ہے کہ سلمان رشدی گلے میں چھرا گھونپنے کے بعد بھی زندہ ہیں۔

http://www.taghribnews.com/vdchwznm-23n-zd.4lt2.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس