تاریخ شائع کریں2022 13 August گھنٹہ 20:22
خبر کا کوڈ : 561315

امریکہ کی شامی تیل پر مشتمل 60 ٹینکرز کی عراق میں منتقلی

 امریکی افواج نے دیگر ممالک کے ذخائر اور وسائل کی چوری اور لوٹ مار اور بین الاقوامی قوانین کیخلاف ورزی کے سلسلے میں، شامی تیل کے 89 آئل ٹینکرز کی چوری کی ہے۔
امریکہ کی شامی تیل پر مشتمل 60 ٹینکرز کی عراق میں منتقلی
امریکہ نے شامی تیل پر مشتمل 60 ٹینکرز کو عراق میں منتقلی کے چند گھنٹوں بعد، ایک نئی کھیپ کو غیر قانونی کراسنگ "الولید" سے عراق میں منتقل کردیا۔

 امریکی افواج نے دیگر ممالک کے ذخائر اور وسائل کی چوری اور لوٹ مار اور بین الاقوامی قوانین کیخلاف ورزی کے سلسلے میں، شامی تیل کے 89 آئل ٹینکرز کی چوری کی ہے۔

شامی سرکاری نیوز ایجنسی "سانا" نے آج بروز ہفتے کو اس ملک کے شمال مشرق میں واقع علاقے الحسکہ کے مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق، کہا ہے کہ امریکی قابض افواج سے تعلق رکھنے والا ایک قافلہ بشمول چوری گئی شامی تیل کے 89 آئل ٹینکرز، شامی سرزمین کو چھوڑکے، عراق میں داخل ہوگیا۔

اس کے علاوہ، امریکی افواج کے ایک اور قافلہ بشمول چوری کی گئی شامی تیل پر مشتمل 60 کاروں اور آئل ٹینکرز، بھی کل بروز جمعہ کو غیر قانونی کراسنگ الولید سے عراقی علاقے السحکہ میں داخل ہوگیا تھا۔

نیز گزشتہ منگل کو امریکی قابض افواج کا ایک اور قافلہ بشمول بکتر بند گاڑی، چوری شدہ ٹرک اور تیل سے بھرے 144 ٹینکرز، الولید غیر قانونی کراسنگ سے عراقی سرزمین میں داخل ہوگیا تھا۔

شامی حکام نے بدستور اس بات پر زور دیا ہے کہ اس ملک میں امریکی افواج کی موجودگی کا مقصد، دہشتگردی کی حمایت اور شامی عوام کے وسائل کی چوری ہے۔
http://www.taghribnews.com/vdca66nmm49nie1.zlk4.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس